Webhosting in Pakistan
Page 2 of 2 FirstFirst 12
Results 13 to 17 of 17

Thread: الف اور ہ کا صحیح استعمال

  1. #13
    mohtasham564's Avatar
    mohtasham564 is offline Senior Member+
    Last Online
    2nd January 2015 @ 11:11 AM
    Join Date
    07 Jun 2011
    Location
    Lahore
    Age
    29
    Gender
    Male
    Posts
    1,667
    Threads
    187
    Credits
    0
    Thanked
    129

    Default

    Webhosting in Pakistan
    nice

  2. #14
    ashib is offline Senior Member+
    Last Online
    16th October 2014 @ 03:12 PM
    Join Date
    01 Oct 2013
    Gender
    Female
    Posts
    41
    Threads
    15
    Credits
    520
    Thanked
    3

    Default

    اردو بہترین طریقے سے سکھا رہے ہیں آپ' بہیت عمدہ

  3. #15
    Join Date
    16 Aug 2009
    Location
    Makkah , Saudia
    Gender
    Male
    Posts
    21,093
    Threads
    285
    Credits
    94,316
    Thanked
    957

    Default

    مفید شیئرنگ کیلئے بہت شکریہ

  4. #16
    Join Date
    30 Sep 2013
    Location
    DIkhan
    Age
    25
    Gender
    Male
    Posts
    657
    Threads
    60
    Credits
    430
    Thanked
    90

    Default

    کیا بات ہے ایک مفید پوسٹ آپ نے شئیر کی ہے شکریہ
    (There is) none worthy of worship except Allah. Muhammad is Messenger of ALLAH.

  5. #17
    leezuka389's Avatar
    leezuka389 is offline Advance Member
    Last Online
    1st April 2020 @ 05:08 PM
    Join Date
    04 Nov 2015
    Gender
    Male
    Posts
    4,633
    Threads
    32
    Credits
    24,342
    Thanked
    263

    Default

    Webhosting in Pakistan
    [QUOTE=~*SEEP*~;2782660]
    السلام علیکم و رحمتہ اللہ و برکاتہ
    اردو املا میں بہت سی غلطیاں اُس وقت بھی سرزد ہوتی ہیں جب ہم انجانے میں کسی لفظ کے آخر میں " ہائے ہوز ( ہ ) " کی بجائے "الف (ا) یا پھر اس کے برعکس " الف" کی جگہ " ہ" لکھ دیتے ہیں ۔۔۔۔۔ اس ضمن میں چند باتیں ہم یہاں پیش کرنا چاہیں گے ۔۔۔۔۔ اگر کہیں کوئی بھول چُوک ہو جائے تو پیشگی معذرت ۔۔۔۔۔
    1۔۔۔۔۔ عربی اور فارسی اصل کے بہت سے ایسے الفاظ ہیں جن کے آخر میں "ہ" آتی ہے اور اُس سے پہلے حرف پر " زبر " ہوتا ہے ۔ ایسے الفاظ میں "ہ" لکھی تو جاتی ہے لیکن پڑھنے/ بولنے میں یہ زیادہ نمایاں نہیں ہوتی بلکہ اپنے سے پہلے حرف کی " زبر" کو سہارا دے کر زیادہ نمایاں کرتی ہے ایسی " ہ" کو " ہائے مختفی" کہا جاتا ہے ۔۔۔۔۔ جیسے
    کعبہ ، پردہ ،جلوہ ، پیمانہ وغیرہ

    ایسے تمام الفاظ کے آخر میں " الف" لکھنا غلط ہے ۔۔۔۔۔ لیکن یہ یاد رہے کہ " ہائے مختفی " صرف عربی اور فارسی الفاظ ہی کے آخر میں آتی ہے دیگر تما م زبانوں کے ایسے الفاظ کے آخر میں " الف " لکھا جاتا ہے جیسے کہ
    آریا ، اُپلا ، اکھاڑا ، باجرا ،بٹوا ، بھروسا ، پتا ، تارا ، راجا ، سمجھوتا ، سایا وغیرہ


    2 ۔۔۔۔۔ ایسے مرکب الفاظ جو اردو ہی میں بنے ہیں ، ان کے آخر میں " الف " ہی آئے گا خواہ اُس مرکب کا ایک جُز عربی یا فارسی کا ہو ، یا پھر دونوں جُز عربی یا فارسی کے ہوں ۔۔۔۔۔ ایسے چند الفاظ
    آب خورا ، اٹھائی گیرا ، بے سُرا ، چوراہا ، ندیدا ، میل خورا ، نا شُکرا وغیرہ


    3 ۔۔۔۔۔ چند مزید الفاظ جن کے آخر میں " ہ " لکھنا غلط ہے
    الغوزا ، الجبرا ، بقایا ، تماشا ، حلوا ، شوربا ، عاشورا ، ناشتا ، ملغوبا وغیرہ


    4 ۔۔۔۔۔ طالب کی جمع " طلبہ " ہے ۔۔۔۔۔ اسے " طلبا " لکھنا درست نہیں ہے ۔۔۔۔۔ اسی طرح صوفی کی جمع " صوفیہ " اور دوا کی جمع " ادویہ " ہے ، انہیں " الف " سے لکھنا درست نہیں ہے

    5 ۔۔۔۔۔ کچھ الفاظ ایسے ہیں جن کے آخر میں " ہ" اور " الف" دونوں لکھے جاتے ہیں لیکن ہر دو صورتوں میں لفظ کا مطلب بدل جاتا ہے اور یوں غلط املا سے معنی تبدیل یا بالکل ہی غارت ہو سکتے ہیں ۔۔۔۔۔ ایسے چند الفاظ
    آسیا ۔۔۔ چکی آسیہ ۔۔۔ فرعون کی بیوی کا نام
    پارا ۔۔۔ مایع دھات جو تھرمامیٹر میں بھری ہوتی ہے پارہ ۔۔۔ ٹکڑا
    چارا ۔۔۔ جانوروں کی خوراک جیسے سبز چارا چارہ ۔۔۔ علاج ، تدبیر
    خاصا ۔۔۔ اچھا بھلا خاصہ ۔۔۔ بادشاہوں اور نوابوں کے لائق نفیس چیز
    دانا ۔۔۔ عقل مند دانہ ۔۔۔ غلہ ، اناج جیسے گندم یا دال کا دانہ
    سایا ۔۔۔ ایک مخصوص پوشاک سایہ ۔۔۔ دھوپ کا متضاد ، جیسے درخت کا سایہ
    زَہرا ۔۔۔ بنتِ رسول صلی اللہ علیہ وسلم کا لقب ۔۔۔ زہرہ ۔۔۔ پتا ، عضوِ بدن
    لالا ۔۔۔ روشن چمک دار ، موتی لالہ ۔۔۔ سُرخ رنگ کا ایک مشہور پھول
    میانا ۔۔۔ چھوٹی پالکی میانہ ۔۔۔ اوسط ، جیسے میانہ روی
    شیوا ۔۔۔ فصیح و بلیغ شیوہ ۔۔۔ عادت ، روش
    نالا ۔۔۔ پانی کی تنگ گذر گاہ ، ندی نالا نالہ ۔۔۔فریاد ، پکار ، آہ و فغاں
    نا ۔۔۔ برائے تاکید ، جیسے آ جاو نا نہ ۔۔۔ نفی جیسے نہ کرو ، نہ جاو
    نوٹ : ناں اردو میں مستعمل نہیں ہے ، یہ پنجابی لفظ ہے جو ہم جیسے پنجابی نادنستہ طور پر اردو میں بھی لکھ جاتے ہیں
    [/QUOTE

    nice sharing janab

Page 2 of 2 FirstFirst 12

Similar Threads

  1. Replies: 96
    Last Post: 5th March 2016, 10:02 AM
  2. Replies: 13
    Last Post: 5th July 2013, 04:31 PM
  3. Replies: 1
    Last Post: 23rd June 2011, 03:15 PM
  4. امام بخاری کا وسعت حافظہ سبحان اللہ
    By Shaukat Hayat in forum Sunnat aur Hadees
    Replies: 4
    Last Post: 27th April 2010, 04:24 PM
  5. Replies: 24
    Last Post: 24th May 2007, 10:45 AM

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •