Webhosting in Pakistan
Results 1 to 12 of 12

Thread: ایک مرتبہ ایک بادشاہ (short story)

  1. #1
    WaQaR DK's Avatar
    WaQaR DK is offline Advance Member
    Last Online
    29th June 2019 @ 12:10 PM
    Join Date
    08 Jul 2013
    Location
    Fateh Jang
    Gender
    Male
    Posts
    2,313
    Threads
    92
    Credits
    1,221
    Thanked
    184

    Default ایک مرتبہ ایک بادشاہ (short story)

    Webhosting in Pakistan
    ایک مرتبہ ایک بادشاہ نے اپنے وزیز کو آدھی سلطنت دینے کو کہا ، لیکن ساتھ میں کچھ شرائط بھی عائد کیں- وزیر نے لالچ میں آکر شرائط جاننے کی درخواست کی بادشاہ نے شرائط 3 سوالوں کی صورت میں بتائیں۔
    سوال نمبر 1: دنیا کی سب سے بڑی سچائی کیا ہے؟
    سوال نمبر 2 : دنیا کا سب سے بڑا دھوکا کیا ہے؟
    سوال نمبر 3 : دنیا کی سب سے میٹھی چیز کیا ہے؟
    بادشاہ نے اپنے وزیر کو حکم دیا کہ وہ ان تین سوالوں کے جواب ایک ہفتہ کے اندر اندر بتائے بصورت دیگر سزائے موت سنائی جائے گی۔ وزیر نے سب پہلے دنیا کی بڑی سچائی جاننے کے لئے ملک کے تمام دانشوروں کو جمع کیا اور ان سے سوالات کے جواب مانگے ۔انہوں نے اپنی اپنی نیکیاں گنوائیں۔ لیکن کسی کی نیکی بڑی اور کسی کی چھوٹی نکلی لیکن سب سے بڑی سچائی کا پتہ نہ چل سکا۔ اس کے بعد وزیر نے دنیا کا سب سے بڑا دھوکا جاننے کے لئے کہا تو تمام دانشور اپنے دیئے ہوئے فریب کا تذکرہ کرتے ہوئے سوچنے لگے کہ کس نے کس کو سب سے بڑا دھوکا دیا لیکن وزیر اس سے بھی مطمئن نہیں ہوا اور سزائے موت کے خوف سے بھیس بدل کر وہاں سے فرار ہوگیا ۔چلتے چلتے رات ہوگئی ،اسی دوران اس کو ایک کسان نظر آیا جو کھرپی سے زمین کھود رہا تھا۔ کسان نے وزیر کو پہچان لیا، وزیر نے اس کو اپنی مشکل بتائی جسے سن کر کسان نے اس کے سوالوں کے جواب کچھ یوں دیئے
    دنیا کی سب سے بڑی سچائی موت ہے ۔
    دنیا کا سب سے بڑا دھوکا زندگی ہے۔
    تیسرے سوال کا جواب بتانے سے پہلے کسان نے کہا کہ میں اگر تمہارے سارے سوالوں کےجواب بتادوں تو مجھے کیا ملے گا ،سلطنت تو تمہارے ہاتھ آئے گی۔ یہ سن کر وزیر نے اسے بیس گھوڑوں کی پیشکش کی اور اسے ہی اصطبل کا نگران بنانے کی بھی پیشکش کی۔ کسان نے یہ سن کر جواب دینے سے انکار کر دیا ۔وزیر نے سوچا کہ یہ تو آدھی سلطنت کا خواب دیکھ رہا ہے۔ وزیر جانے لگا تو کسان بولا کہ اگر بھاگ جاؤگے تو ساری زندگی بھاگتے رہو گے اور بادشاہ کے بندے تمہارا پیچھا کرتے رہیں گے اور اگر پلٹو گے تو جان سے مارے جاؤگے۔ یہ سن کر وزیر رک گیا اور کسان کو آدھی سلطنت کی پیشکش کی لیکن کسان نے اسے لینے سے بھی انکار کر دیا ۔اتنے میں ایک کتا آیا اور پیالے میں رکھے ہوئے دودھ میں سے آدھا پی کر چلا گیا۔ کسان نے وزیر سے کہا مجھے آدھی سلطنت نہیں چاہیے بس تم اس بچے ہوئے دودھ کو پی لوتو میں تمہارے تیسرے سوال کا جواب بتادوں گا۔ یہ سن کر وزیر تلملا گیا مگر اپنی موت اور جاسوسوں کے ڈر سے اس نے دودھ پی لیا۔ وزیر نے دودھ پی کر کسان کی طرف دیکھا اور اپنے سوال کا جواب مانگا تو کسان نے کہا کہ
    دنیا کی سب سے میٹھی چیز انسان کی غرض ہے- جس کے لئے وہ ذلیل ترین کام بھی کر جاتا ہے

  2. #2
    Join Date
    22 Oct 2009
    Location
    ~*Dream*World*~
    Gender
    Male
    Posts
    21,935
    Threads
    299
    Credits
    1,125
    Thanked
    1701

    Default

    moved from contest zone
    ~* W@R T!ll D3@t|-| *~
    ~* I'll Win Not Immediately But Definitely *~

  3. #3
    ssiraj's Avatar
    ssiraj is offline Advance Member
    Last Online
    4th November 2019 @ 03:54 PM
    Join Date
    02 Nov 2012
    Location
    []Hearts[]
    Age
    28
    Gender
    Male
    Posts
    3,041
    Threads
    220
    Credits
    200
    Thanked
    195

    Default

    Gud..

  4. #4
    Babarali435's Avatar
    Babarali435 is offline Advance Member
    Last Online
    11th April 2020 @ 02:06 PM
    Join Date
    23 Mar 2013
    Location
    Punjab
    Gender
    Male
    Posts
    12,818
    Threads
    225
    Credits
    659
    Thanked
    404

    Default

    Ye Short story hai
    nice

  5. #5
    SERIOUS is offline Member
    Last Online
    5th March 2014 @ 06:33 PM
    Join Date
    30 Sep 2012
    Location
    LAHORE
    Gender
    Male
    Posts
    2,001
    Threads
    310
    Thanked
    164

    Default

    thanks

  6. #6
    WaQaR DK's Avatar
    WaQaR DK is offline Advance Member
    Last Online
    29th June 2019 @ 12:10 PM
    Join Date
    08 Jul 2013
    Location
    Fateh Jang
    Gender
    Male
    Posts
    2,313
    Threads
    92
    Credits
    1,221
    Thanked
    184

    Default

    Sisraj, babar, serious Thanx to oll for reply....

  7. #7
    diyaqureshi's Avatar
    diyaqureshi is offline Senior Member+
    Last Online
    18th August 2016 @ 03:41 PM
    Join Date
    16 Sep 2013
    Gender
    Female
    Posts
    742
    Threads
    20
    Credits
    987
    Thanked
    75

    Default

    nice thanks for sharing

  8. #8
    azkraja is offline Senior Member+
    Last Online
    11th December 2018 @ 12:44 PM
    Join Date
    16 Mar 2010
    Gender
    Male
    Posts
    427
    Threads
    4
    Credits
    12
    Thanked
    42

    Default

    Nice Sharing, Thanks

  9. #9
    Fahad87's Avatar
    Fahad87 is offline Advance Member
    Last Online
    11th September 2019 @ 03:56 PM
    Join Date
    29 Nov 2012
    Location
    Pakistan
    Gender
    Male
    Posts
    5,042
    Threads
    243
    Credits
    6,193
    Thanked
    264

    Default

    phir kya howa jab woh BADSHAH k pass wapas gaya ? ore usko jawab diyay ?

  10. #10
    WaQaR DK's Avatar
    WaQaR DK is offline Advance Member
    Last Online
    29th June 2019 @ 12:10 PM
    Join Date
    08 Jul 2013
    Location
    Fateh Jang
    Gender
    Male
    Posts
    2,313
    Threads
    92
    Credits
    1,221
    Thanked
    184

    Default

    Quote Fahad87 said: View Post
    phir kya howa jab woh BADSHAH k pass wapas gaya ? ore usko jawab diyay ?
    badsha ne jab osy saltant deny ka kaha tu os ne enkar kar dia aor seedy radty pe aa gia... Kisan ki batun ne os per asr kia

  11. #11
    Join Date
    16 Aug 2009
    Location
    Makkah , Saudia
    Gender
    Male
    Posts
    21,230
    Threads
    285
    Credits
    95,038
    Thanked
    959

    Default

    بہت خوب

  12. #12
    leezuka389's Avatar
    leezuka389 is offline Advance Member
    Last Online
    5th June 2020 @ 07:32 PM
    Join Date
    04 Nov 2015
    Gender
    Male
    Posts
    4,723
    Threads
    33
    Credits
    24,841
    Thanked
    269

    Default

    Webhosting in Pakistan
    [QUOTE=WaQaR DK;4311984]ایک مرتبہ ایک بادشاہ نے اپنے وزیز کو آدھی سلطنت دینے کو کہا ، لیکن ساتھ میں کچھ شرائط بھی عائد کیں- وزیر نے لالچ میں آکر شرائط جاننے کی درخواست کی بادشاہ نے شرائط 3 سوالوں کی صورت میں بتائیں۔
    سوال نمبر 1: دنیا کی سب سے بڑی سچائی کیا ہے؟
    سوال نمبر 2 : دنیا کا سب سے بڑا دھوکا کیا ہے؟
    سوال نمبر 3 : دنیا کی سب سے میٹھی چیز کیا ہے؟
    بادشاہ نے اپنے وزیر کو حکم دیا کہ وہ ان تین سوالوں کے جواب ایک ہفتہ کے اندر اندر بتائے بصورت دیگر سزائے موت سنائی جائے گی۔ وزیر نے سب پہلے دنیا کی بڑی سچائی جاننے کے لئے ملک کے تمام دانشوروں کو جمع کیا اور ان سے سوالات کے جواب مانگے ۔انہوں نے اپنی اپنی نیکیاں گنوائیں۔ لیکن کسی کی نیکی بڑی اور کسی کی چھوٹی نکلی لیکن سب سے بڑی سچائی کا پتہ نہ چل سکا۔ اس کے بعد وزیر نے دنیا کا سب سے بڑا دھوکا جاننے کے لئے کہا تو تمام دانشور اپنے دیئے ہوئے فریب کا تذکرہ کرتے ہوئے سوچنے لگے کہ کس نے کس کو سب سے بڑا دھوکا دیا لیکن وزیر اس سے بھی مطمئن نہیں ہوا اور سزائے موت کے خوف سے بھیس بدل کر وہاں سے فرار ہوگیا ۔چلتے چلتے رات ہوگئی ،اسی دوران اس کو ایک کسان نظر آیا جو کھرپی سے زمین کھود رہا تھا۔ کسان نے وزیر کو پہچان لیا، وزیر نے اس کو اپنی مشکل بتائی جسے سن کر کسان نے اس کے سوالوں کے جواب کچھ یوں دیئے
    دنیا کی سب سے بڑی سچائی موت ہے ۔
    دنیا کا سب سے بڑا دھوکا زندگی ہے۔
    تیسرے سوال کا جواب بتانے سے پہلے کسان نے کہا کہ میں اگر تمہارے سارے سوالوں کےجواب بتادوں تو مجھے کیا ملے گا ،سلطنت تو تمہارے ہاتھ آئے گی۔ یہ سن کر وزیر نے اسے بیس گھوڑوں کی پیشکش کی اور اسے ہی اصطبل کا نگران بنانے کی بھی پیشکش کی۔ کسان نے یہ سن کر جواب دینے سے انکار کر دیا ۔وزیر نے سوچا کہ یہ تو آدھی سلطنت کا خواب دیکھ رہا ہے۔ وزیر جانے لگا تو کسان بولا کہ اگر بھاگ جاؤگے تو ساری زندگی بھاگتے رہو گے اور بادشاہ کے بندے تمہارا پیچھا کرتے رہیں گے اور اگر پلٹو گے تو جان سے مارے جاؤگے۔ یہ سن کر وزیر رک گیا اور کسان کو آدھی سلطنت کی پیشکش کی لیکن کسان نے اسے لینے سے بھی انکار کر دیا ۔اتنے میں ایک کتا آیا اور پیالے میں رکھے ہوئے دودھ میں سے آدھا پی کر چلا گیا۔ کسان نے وزیر سے کہا مجھے آدھی سلطنت نہیں چاہیے بس تم اس بچے ہوئے دودھ کو پی لوتو میں تمہارے تیسرے سوال کا جواب بتادوں گا۔ یہ سن کر وزیر تلملا گیا مگر اپنی موت اور جاسوسوں کے ڈر سے اس نے دودھ پی لیا۔ وزیر نے دودھ پی کر کسان کی طرف دیکھا اور اپنے سوال کا جواب مانگا تو کسان نے کہا کہ
    دنیا کی سب سے میٹھی چیز انسان کی غرض ہے- جس کے لئے وہ ذلیل ترین کام بھی کر جاتا ہے
    [/QUOTE


    nice sharing janab
    lajavab
    humry sat shar karny ka shokrya

Similar Threads

  1. Replies: 17
    Last Post: 3rd December 2018, 03:34 PM
  2. Replies: 6
    Last Post: 5th November 2016, 10:46 PM
  3. Replies: 10
    Last Post: 7th July 2012, 10:06 AM
  4. Replies: 1
    Last Post: 18th June 2012, 07:28 AM
  5. Replies: 9
    Last Post: 29th October 2011, 10:29 AM

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •