Webhosting in Pakistan
Results 1 to 6 of 6

Thread: خبردار! پانچ چیزوں کا روزانہ استعمال آپ کو 

  1. #1
    Shaheen Latif's Avatar
    Shaheen Latif is offline Super Moderator
    Last Online
    Yesterday @ 11:09 PM
    Join Date
    26 Mar 2010
    Location
    Lahore
    Gender
    Male
    Posts
    8,029
    Threads
    1344
    Credits
    66,499
    Thanked
    1246

    Default خبردار! پانچ چیزوں کا روزانہ استعمال آپ کو 

    Webhosting in Pakistan
    خبردار! پانچ چیزوں کا روزانہ استعمال آپ کو بیمار کر سکتا ہے!

    گئے وقتوں میں ذرائع ابلاغ میں لوگوں کے جبری وسوسوں کی کہانیاں بھی بیان کی جاتی تھیں۔ ایک مشہور موسیقار محمد عبدالوھاب پرمضر صحت جراثیم کے وساوس کچھ ایسے سوار ہوتے کہ کہا جاتا ہے کہ وہ صفائی کے لیے صابن کو بھی دوسرے صابن سے دھویا کرتے تھے۔یہ بھی سنا گیا کہ کمپیوٹر کے ’کی بورڈ‘ کی سلوٹوں اور موبائل فون کی اسکرین پربھی جراثیم ہوتے ہیں۔یہ تمام باتیں وساوس اور خود ساختہ پریشانی ہوسکتی ہے اور ہمارا مقصد کسی کو وسوسوں میں مبتلا کرنا نہیں، تاہم برطانوی اخبار ’ڈیلی میل‘ نے ایک رپورٹ میں سائنسی حقائق کی بنیاد پر بتایا ہے کہ پانچ چیزیں جنہیں ہم روزانہ استعمال کرتے ہیں ہماری صحت کے لیے نقصان دہ بن سکتی ہیں۔ ان پانچ چیزوں کا استعمال ممنوع نہیں البتہ ان کا طریقہ استعمال تبدیل کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ روز مرہ کے استعمال سے یہ چیزیں جراثیم سے آلود ہوجاتی ہیں۔
    ٹچ اسکرینیں

    Name:  1.jpg
Views: 706
Size:  56.6 KB

    ہم میں سے ہر ایک دن ایک سے زاید مرتبہ ٹوائلٹ کی سیٹ کا استعمال کرتا ہے مگر پریشان کن بات یہ ہے کہ ہم ٹوائلٹ کی سیٹوں کی صفائی کا خاطر خواہ خیال نہیں رکھتے۔
    شاپنگ یا رقوم کے حصول کے لیے آج کل ٹچ اسکرین والی مشیوں اور اے ٹی ایمز سمیت دیگر آلات کا استعمال عام ہے۔ جب تک ہم ٹچ اسکرین کو خود نہیں چھوئیں گے وہ کام نہیں کرتی۔ یاد رکھنے کی بات یہ ہے کہ ان ٹچ اسکرین مشینوں کی روز مرہ کی بنیاد پر صفائی کی ضرورت ہے۔ مگر حقیقت یہ ہے کہ ٹچ اسکرینوں کی صفائی میں بھی ہم اتنی غفلت برتے ہیں جتنا کہ ہم ٹوائلٹ کی صفائی میں لاپرواہی کرتے ہیں۔
    جریدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق روز مرہ استعمال ہونے والی 50 فی صد اسکرینیں رطوبت اور جراثیم سے آلودہ ہوتی ہیں۔
    گراؤنڈ فلور لفٹ کے بٹن
    جو لوگ گھروں یا دفاتر میں گراؤنڈ فلور کی لفٹ کا استعمال کرتے ہیں تو انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ سردی کے موسم میں لفٹ کے بٹن’پارا۔ انفلوئنزا‘ جیسے سردی کے جراثیم کا موجب بن سکتے ہیں۔

    شاپنگ بیگوں کا دوبارہ استعمال

    Name:  2.jpg
Views: 695
Size:  103.0 KB

    جب ہم بازار سے کوئی چیز خرید کرشاپنگ بیگ میں ڈالتے ہیں تو خالی ہونے کےبعد شاپنگ بیگ کو دوبارہ کسی اور مقصد کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ شاپنگ بینگ کے دوبارہ استعمال میں ہم صفائی کا کوئی اہتمام نہیں کرتے۔ جرہدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق99 فی صد استعمال شدہ شاپنگ بیگ’کولیفوریو‘ اور ’ایکولائی‘ جیسے جراثیم سے آلودہ ہوتے ہیں۔
    تولیے

    Name:  3.jpg
Views: 689
Size:  106.2 KB

    گھروں میں تولیے کا مشترکہ استعمال کیا جاتا ہے۔ عموما ہم ہاتھ صاف کرنے کے بعد تولیے کو ایسے ہی چھوڑ دیتے ہیں۔ گیلے تولیے میں کئی اقسام کے بیکٹیریاز جنم لیتے ہیں جو ایک سے دوسرے شخص میں منتقل ہوتے رہتے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ تولیے کودو دن بعد ضرور دھو لینا چاہیے ورنہ اس کا استعمال بھی بیماریوں کا موجب بن سکتا ہے۔

    برتنوں کے دستے

    Name:  4.jpg
Views: 686
Size:  88.4 KB

    دفاتر اور گھروں میں استعمال کے بعض برتوں کے دستے ہوتے ہیں۔ دفتر میں آنے والے لوگ خود کو دن بھر بیدار اور چست رکھنے کے لیے خود ہی کافی تیار کرتے ہیں اور اس مقصد کے لیے وہ دستے والے برتن استعمال کرتے ہیں۔

    اس طرح جب ایک ہی برتن کو کئی افراد استعمال کریں گے تو ان برتنوں کے دستوں پر جراثیم پیدا ہونے کے ساتھ ساتھ وہ کافی، چائے یا کسی دوسرے چیز میں منتقل ہو کر اسے استعمال کرنے والے تک پہنچ جائیں گے۔ جریدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق 50 فی صد برتنوں کے دستوں پر’کولیفورم‘ نامی جراثیم پیدا ہوتے ہیں۔ اس لیے استعمال سے قبل برتنوں کے دستوں کو ایک بار دھو لینا آپ کی صحت کے لیے زیادہ مفید ہے۔

  2. #2
    Join Date
    16 Aug 2009
    Location
    Makkah , Saudia
    Gender
    Male
    Posts
    16,454
    Threads
    281
    Credits
    75,311
    Thanked
    890

    Default

    Quote Shaheen Latif said: View Post
    خبردار! پانچ چیزوں کا روزانہ استعمال آپ کو بیمار کر سکتا ہے!

    گئے وقتوں میں ذرائع ابلاغ میں لوگوں کے جبری وسوسوں کی کہانیاں بھی بیان کی جاتی تھیں۔ ایک مشہور موسیقار محمد عبدالوھاب پرمضر صحت جراثیم کے وساوس کچھ ایسے سوار ہوتے کہ کہا جاتا ہے کہ وہ صفائی کے لیے صابن کو بھی دوسرے صابن سے دھویا کرتے تھے۔یہ بھی سنا گیا کہ کمپیوٹر کے ’کی بورڈ‘ کی سلوٹوں اور موبائل فون کی اسکرین پربھی جراثیم ہوتے ہیں۔یہ تمام باتیں وساوس اور خود ساختہ پریشانی ہوسکتی ہے اور ہمارا مقصد کسی کو وسوسوں میں مبتلا کرنا نہیں، تاہم برطانوی اخبار ’ڈیلی میل‘ نے ایک رپورٹ میں سائنسی حقائق کی بنیاد پر بتایا ہے کہ پانچ چیزیں جنہیں ہم روزانہ استعمال کرتے ہیں ہماری صحت کے لیے نقصان دہ بن سکتی ہیں۔ ان پانچ چیزوں کا استعمال ممنوع نہیں البتہ ان کا طریقہ استعمال تبدیل کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ روز مرہ کے استعمال سے یہ چیزیں جراثیم سے آلود ہوجاتی ہیں۔
    ٹچ اسکرینیں

    Name:  1.jpg
Views: 706
Size:  56.6 KB

    ہم میں سے ہر ایک دن ایک سے زاید مرتبہ ٹوائلٹ کی سیٹ کا استعمال کرتا ہے مگر پریشان کن بات یہ ہے کہ ہم ٹوائلٹ کی سیٹوں کی صفائی کا خاطر خواہ خیال نہیں رکھتے۔
    شاپنگ یا رقوم کے حصول کے لیے آج کل ٹچ اسکرین والی مشیوں اور اے ٹی ایمز سمیت دیگر آلات کا استعمال عام ہے۔ جب تک ہم ٹچ اسکرین کو خود نہیں چھوئیں گے وہ کام نہیں کرتی۔ یاد رکھنے کی بات یہ ہے کہ ان ٹچ اسکرین مشینوں کی روز مرہ کی بنیاد پر صفائی کی ضرورت ہے۔ مگر حقیقت یہ ہے کہ ٹچ اسکرینوں کی صفائی میں بھی ہم اتنی غفلت برتے ہیں جتنا کہ ہم ٹوائلٹ کی صفائی میں لاپرواہی کرتے ہیں۔
    جریدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق روز مرہ استعمال ہونے والی 50 فی صد اسکرینیں رطوبت اور جراثیم سے آلودہ ہوتی ہیں۔
    گراؤنڈ فلور لفٹ کے بٹن
    جو لوگ گھروں یا دفاتر میں گراؤنڈ فلور کی لفٹ کا استعمال کرتے ہیں تو انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ سردی کے موسم میں لفٹ کے بٹن’پارا۔ انفلوئنزا‘ جیسے سردی کے جراثیم کا موجب بن سکتے ہیں۔

    شاپنگ بیگوں کا دوبارہ استعمال

    Name:  2.jpg
Views: 695
Size:  103.0 KB

    جب ہم بازار سے کوئی چیز خرید کرشاپنگ بیگ میں ڈالتے ہیں تو خالی ہونے کےبعد شاپنگ بیگ کو دوبارہ کسی اور مقصد کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ شاپنگ بینگ کے دوبارہ استعمال میں ہم صفائی کا کوئی اہتمام نہیں کرتے۔ جرہدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق99 فی صد استعمال شدہ شاپنگ بیگ’کولیفوریو‘ اور ’ایکولائی‘ جیسے جراثیم سے آلودہ ہوتے ہیں۔
    تولیے

    Name:  3.jpg
Views: 689
Size:  106.2 KB

    گھروں میں تولیے کا مشترکہ استعمال کیا جاتا ہے۔ عموما ہم ہاتھ صاف کرنے کے بعد تولیے کو ایسے ہی چھوڑ دیتے ہیں۔ گیلے تولیے میں کئی اقسام کے بیکٹیریاز جنم لیتے ہیں جو ایک سے دوسرے شخص میں منتقل ہوتے رہتے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ تولیے کودو دن بعد ضرور دھو لینا چاہیے ورنہ اس کا استعمال بھی بیماریوں کا موجب بن سکتا ہے۔

    برتنوں کے دستے

    Name:  4.jpg
Views: 686
Size:  88.4 KB

    دفاتر اور گھروں میں استعمال کے بعض برتوں کے دستے ہوتے ہیں۔ دفتر میں آنے والے لوگ خود کو دن بھر بیدار اور چست رکھنے کے لیے خود ہی کافی تیار کرتے ہیں اور اس مقصد کے لیے وہ دستے والے برتن استعمال کرتے ہیں۔

    اس طرح جب ایک ہی برتن کو کئی افراد استعمال کریں گے تو ان برتنوں کے دستوں پر جراثیم پیدا ہونے کے ساتھ ساتھ وہ کافی، چائے یا کسی دوسرے چیز میں منتقل ہو کر اسے استعمال کرنے والے تک پہنچ جائیں گے۔ جریدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق 50 فی صد برتنوں کے دستوں پر’کولیفورم‘ نامی جراثیم پیدا ہوتے ہیں۔ اس لیے استعمال سے قبل برتنوں کے دستوں کو ایک بار دھو لینا آپ کی صحت کے لیے زیادہ مفید ہے۔
    Very Informative Sharing

    Thank you so much

  3. #3
    Rana268's Avatar
    Rana268 is offline Moderator
    Last Online
    8th May 2019 @ 11:08 PM
    Join Date
    24 Jan 2017
    Location
    Faisalabad
    Age
    19
    Gender
    Male
    Posts
    2,864
    Threads
    294
    Credits
    21,019
    Thanked
    462

    Default

    Quote Shaheen Latif said: View Post
    خبردار! پانچ چیزوں کا روزانہ استعمال آپ کو بیمار کر سکتا ہے!

    گئے وقتوں میں ذرائع ابلاغ میں لوگوں کے جبری وسوسوں کی کہانیاں بھی بیان کی جاتی تھیں۔ ایک مشہور موسیقار محمد عبدالوھاب پرمضر صحت جراثیم کے وساوس کچھ ایسے سوار ہوتے کہ کہا جاتا ہے کہ وہ صفائی کے لیے صابن کو بھی دوسرے صابن سے دھویا کرتے تھے۔یہ بھی سنا گیا کہ کمپیوٹر کے ’کی بورڈ‘ کی سلوٹوں اور موبائل فون کی اسکرین پربھی جراثیم ہوتے ہیں۔یہ تمام باتیں وساوس اور خود ساختہ پریشانی ہوسکتی ہے اور ہمارا مقصد کسی کو وسوسوں میں مبتلا کرنا نہیں، تاہم برطانوی اخبار ’ڈیلی میل‘ نے ایک رپورٹ میں سائنسی حقائق کی بنیاد پر بتایا ہے کہ پانچ چیزیں جنہیں ہم روزانہ استعمال کرتے ہیں ہماری صحت کے لیے نقصان دہ بن سکتی ہیں۔ ان پانچ چیزوں کا استعمال ممنوع نہیں البتہ ان کا طریقہ استعمال تبدیل کرنے کی ضرورت ہے کیونکہ روز مرہ کے استعمال سے یہ چیزیں جراثیم سے آلود ہوجاتی ہیں۔
    ٹچ اسکرینیں

    Name:  1.jpg
Views: 706
Size:  56.6 KB

    ہم میں سے ہر ایک دن ایک سے زاید مرتبہ ٹوائلٹ کی سیٹ کا استعمال کرتا ہے مگر پریشان کن بات یہ ہے کہ ہم ٹوائلٹ کی سیٹوں کی صفائی کا خاطر خواہ خیال نہیں رکھتے۔
    شاپنگ یا رقوم کے حصول کے لیے آج کل ٹچ اسکرین والی مشیوں اور اے ٹی ایمز سمیت دیگر آلات کا استعمال عام ہے۔ جب تک ہم ٹچ اسکرین کو خود نہیں چھوئیں گے وہ کام نہیں کرتی۔ یاد رکھنے کی بات یہ ہے کہ ان ٹچ اسکرین مشینوں کی روز مرہ کی بنیاد پر صفائی کی ضرورت ہے۔ مگر حقیقت یہ ہے کہ ٹچ اسکرینوں کی صفائی میں بھی ہم اتنی غفلت برتے ہیں جتنا کہ ہم ٹوائلٹ کی صفائی میں لاپرواہی کرتے ہیں۔
    جریدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق روز مرہ استعمال ہونے والی 50 فی صد اسکرینیں رطوبت اور جراثیم سے آلودہ ہوتی ہیں۔
    گراؤنڈ فلور لفٹ کے بٹن
    جو لوگ گھروں یا دفاتر میں گراؤنڈ فلور کی لفٹ کا استعمال کرتے ہیں تو انہیں معلوم ہونا چاہیے کہ سردی کے موسم میں لفٹ کے بٹن’پارا۔ انفلوئنزا‘ جیسے سردی کے جراثیم کا موجب بن سکتے ہیں۔

    شاپنگ بیگوں کا دوبارہ استعمال

    Name:  2.jpg
Views: 695
Size:  103.0 KB

    جب ہم بازار سے کوئی چیز خرید کرشاپنگ بیگ میں ڈالتے ہیں تو خالی ہونے کےبعد شاپنگ بیگ کو دوبارہ کسی اور مقصد کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ شاپنگ بینگ کے دوبارہ استعمال میں ہم صفائی کا کوئی اہتمام نہیں کرتے۔ جرہدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق99 فی صد استعمال شدہ شاپنگ بیگ’کولیفوریو‘ اور ’ایکولائی‘ جیسے جراثیم سے آلودہ ہوتے ہیں۔
    تولیے

    Name:  3.jpg
Views: 689
Size:  106.2 KB

    گھروں میں تولیے کا مشترکہ استعمال کیا جاتا ہے۔ عموما ہم ہاتھ صاف کرنے کے بعد تولیے کو ایسے ہی چھوڑ دیتے ہیں۔ گیلے تولیے میں کئی اقسام کے بیکٹیریاز جنم لیتے ہیں جو ایک سے دوسرے شخص میں منتقل ہوتے رہتے ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ تولیے کودو دن بعد ضرور دھو لینا چاہیے ورنہ اس کا استعمال بھی بیماریوں کا موجب بن سکتا ہے۔

    برتنوں کے دستے

    Name:  4.jpg
Views: 686
Size:  88.4 KB

    دفاتر اور گھروں میں استعمال کے بعض برتوں کے دستے ہوتے ہیں۔ دفتر میں آنے والے لوگ خود کو دن بھر بیدار اور چست رکھنے کے لیے خود ہی کافی تیار کرتے ہیں اور اس مقصد کے لیے وہ دستے والے برتن استعمال کرتے ہیں۔

    اس طرح جب ایک ہی برتن کو کئی افراد استعمال کریں گے تو ان برتنوں کے دستوں پر جراثیم پیدا ہونے کے ساتھ ساتھ وہ کافی، چائے یا کسی دوسرے چیز میں منتقل ہو کر اسے استعمال کرنے والے تک پہنچ جائیں گے۔ جریدہ ’سائنس آف ایس‘ کے مطابق 50 فی صد برتنوں کے دستوں پر’کولیفورم‘ نامی جراثیم پیدا ہوتے ہیں۔ اس لیے استعمال سے قبل برتنوں کے دستوں کو ایک بار دھو لینا آپ کی صحت کے لیے زیادہ مفید ہے۔
    بھائی بہت اچھی پوسٹ کی آپ نے
    ہماری رہنمائی کا بہت شکریہ

  4. #4
    Shaheen Latif's Avatar
    Shaheen Latif is offline Super Moderator
    Last Online
    Yesterday @ 11:09 PM
    Join Date
    26 Mar 2010
    Location
    Lahore
    Gender
    Male
    Posts
    8,029
    Threads
    1344
    Credits
    66,499
    Thanked
    1246

    Default

    Quote Baazigar said: View Post


    Very Informative Sharing

    Thank you so much
    پسند کرنے کا بہت شکریہ بھائی۔


    - - - Updated - - -

    Quote Rana268 said: View Post


    بھائی بہت اچھی پوسٹ کی آپ نے
    ہماری رہنمائی کا بہت شکریہ
    پسند کرنے کا بہت شکریہ بھائی۔

  5. #5
    Abdulqadeer786 is offline Senior Member+
    Last Online
    22nd May 2019 @ 10:59 AM
    Join Date
    18 Feb 2017
    Gender
    Male
    Posts
    48
    Threads
    9
    Credits
    280
    Thanked
    0

    Default

    السلام علیکم آج میں آپ دوستو کے کیئے ایک بھت زبردست وڈیو لیکر آیا ھوں جس میں ھم آپ کو صرف دس روپے میں رنگ گورا کرنے کے بارے میں بتائینگے تو اس وڈیو کو دیکھنے کے لئے نیچے لنک پر کلک کریں
    https://youtu.be/80XQb_ZDm_A

    - - - Updated - - -

    Hi

  6. #6
    jamshed37 is offline Senior Member+
    Last Online
    3rd May 2018 @ 12:06 AM
    Join Date
    24 Sep 2016
    Age
    39
    Gender
    Male
    Posts
    52
    Threads
    2
    Credits
    235
    Thanked
    2

    Default

    Webhosting in Pakistan
    Good post
    Thanks for sharing

Similar Threads

  1. Replies: 5
    Last Post: 10th June 2015, 05:06 PM
  2. Replies: 2
    Last Post: 15th October 2011, 03:23 PM
  3. Replies: 2
    Last Post: 21st August 2009, 08:52 AM

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •