Page 4 of 4 FirstFirst 1234
Results 37 to 44 of 44

Thread: بٹ کوئن کیا ہے ؟

  1. #37
    cutemirza911 is offline Senior Member+
    Last Online
    27th September 2017 @ 03:50 PM
    Join Date
    06 Dec 2008
    Location
    Vehari
    Gender
    Male
    Posts
    239
    Threads
    10
    Credits
    83
    Thanked
    14

    Default

    kamaaal kr dia ap ny. full information di . aalaa

  2. #38
    ALi.HaiDEr's Avatar
    ALi.HaiDEr is offline Super Moderator
    Last Online
    Today @ 07:59 PM
    Join Date
    16 Aug 2015
    Location
    @itdunya.com
    Gender
    Male
    Posts
    6,323
    Threads
    337
    Credits
    35,204
    Thanked
    797

    Default

    شکریہ

  3. #39
    Abubaker30's Avatar
    Abubaker30 is offline ITD STUDNT
    Last Online
    12th October 2017 @ 04:41 PM
    Join Date
    01 Oct 2014
    Location
    Karachi
    Gender
    Male
    Posts
    1,659
    Threads
    97
    Credits
    8,018
    Thanked
    113

    Default

    وعلیکم السلام علی حیدر بھائی۔۔۔سب سے پہلے تو یہ بتائیں ایرن منی۔۔۔۔کیسے کی خاتی ہے۔۔۔۔۔
    مجھے یہ تو پتہ ہے اس کے لئے ہمیں کافی محنت کرنی پڑتی ہے
    مگر یہ پئسے حاصل کئے جاتے ہیں؟؟
    میں نے پائیونیر اکاونٹ بنایا تو اب تک مجھے میرا کارڈ نہیں ملا؟؟
    میں بار بار کوشش کر کہ تھک گیا ہوں

    Sent from my SM-J510F using Tapatalk
    TIME IS A BEST TIACHARE

  4. #40
    ALi.HaiDEr's Avatar
    ALi.HaiDEr is offline Super Moderator
    Last Online
    Today @ 07:59 PM
    Join Date
    16 Aug 2015
    Location
    @itdunya.com
    Gender
    Male
    Posts
    6,323
    Threads
    337
    Credits
    35,204
    Thanked
    797

    Default

    Quote Abubaker30 said: View Post
    وعلیکم السلام علی حیدر بھائی۔۔۔سب سے پہلے تو یہ بتائیں ایرن منی۔۔۔۔کیسے کی خاتی ہے۔۔۔۔۔
    مجھے یہ تو پتہ ہے اس کے لئے ہمیں کافی محنت کرنی پڑتی ہے
    مگر یہ پئسے حاصل کئے جاتے ہیں؟؟
    میں نے پائیونیر اکاونٹ بنایا تو اب تک مجھے میرا کارڈ نہیں ملا؟؟
    میں بار بار کوشش کر کہ تھک گیا ہوں

    Sent from my SM-J510F using Tapatalk
    پائیونیر کے کارڈ کے لئے محنت نہ کریں کیونکہ جتنے آپ ابھی پریشان ہیں اُتنے آپ اُسے حاصل کر کے پریشان ہوں گے
    ارن منی آنلائن فیلڈ میں پیسے کمانے کے لئے دو طرح کی سائٹس ہوتی ہیں
    ایک جن میں انوسٹ کرنا پڑتا ہے
    دوسری جن میں کچھ انوسٹ نہیں کرنا پڑتا

    آ جاتی ہیں Categories ان سائٹس میں آگے چل کر اور

    جن سائٹس میں آپ کچھ پیسے انوسٹ کرتے ہیں اُن سے آپ کو اچھا معاوضہ ملنے کی امید ہو سکتی ہے
    لیکن کوئی بھی شخص آپ کو کسی بھی سائٹ کی ہمیشہ آن رہنے کی
    گارنٹی نہیں دے گا یہ ٹوٹل رسک پر کام ہوتا ہے ۔اس سے آپ کے پیسے ضائع بھی ہو سکتے ہیں جو کہ اس فیلڈ میں ہر نئے بندے کے ہوتے ہیں۔

    دوسری سائٹ جن میں پیسے انوسٹ نہیں کرنے پڑتے وہ بھی پے کرتے ہیں لیکن انتہائی تھوڑے
    یوں سمجھ لیں ٹکوں میں پیسے دیتے ہیں ۔

    ان سائٹس میں کم سے کم ود ڈرا کرنے کی جو لمٹ ہوتی ہے وہاں تک پہنچتے پہنچتے بہت ٹائم لگ جاتا ہے اور جتنے پیسے ملتے ہیں اُس سے زیادہ آپ انٹرنیٹ آن رکھ کر خرچ کر چکے ہوتے ہیں ۔یا کام کرنے والا تھک ہار جاتا ہے ۔

    پر کام کرتی ہے Luck دیکھا جائے تو یہ فیلڈ لک
    آپ کا ٹائم اچھا چل رہا ہے تو آپ کو یقیناََ فائدہ ہو گا ۔
    یہ صرف ایک پہلو ہے ۔

    آئی ٹی دُنیا پر ایک ممبر ہیں سجاد خان صاحب وہ اس فیلڈ میں میرے بھی اُستاد ہیں میں نے اُن کو ہی دیکھ کر یہ فیلڈ جائن کی
    اور جو اوپر باتیں لکھی ہیں وہ میرا تجربہ ہے ۔

    میں یہ نہیں کہتا کہ اس فیلڈ میں نقصان ہی نقصان ہے لیکن ریشو
    70 : 30
    ہے ۔
    تو میرا مشورہ ہے آپ اگر آنلائن ورک کرنا ہی چاہتے ہیں تو کوئی ایک آنلائن گُر سیکھ لیں ۔
    جیسے ایس ای او ، بلاگنگ، یوٹیوب، فوٹو شاپ، کورل اور اس جیسی اکتیس سو گُر ہیں
    ان میں سے کوئی ایک سیکھ کر
    Fiver.com
    پر کام کریں

  5. #41
    Join Date
    17 Jul 2017
    Age
    16
    Gender
    Male
    Posts
    2,561
    Threads
    243
    Credits
    17,338
    Thanked
    772

    Default

    Quote ALi.HaiDEr said: View Post



    السلام علیکم پیارے دوستوں
    جب میں ارن منی آنلائن فیلڈ میں آیا تو میرا پالا بٹ کوئن سے پڑا جس سے متعلق مجھے کچھ علم نہ تھا ، لیکن آج بٹ کوئن سے متعلق کچھ سد بدھ ضرور ہے
    انٹرنیٹ پر سرچنگ کے دوران ایک رپورٹ پڑھی بٹ کوئن سے متعلق تو سوچا اُن دوستوں کے لئے شئیر کر دوں جو اس فیلڈ میں نئے ہیں
    یہ رپورٹ اُردو ویب کے اشتراک سے شئیر کی جا رہی ہے ،ملاحظہ فرمائیں۔

    کسی بھی ملک کی معیشت میں کرنسی کا کردار بہت اہم ہوتا ہے۔ زمانہ قدیم سے ہی کبھی اناج، نمک، زعفران اور کئی مصالحہ جات کو لین دین کے لیے بطور کرنسی استعمال کیا گیا۔
    ایک ہزار سال قبل مسیح چین میں کانسی کو سکوں کی شکل میں ڈھال کر دنیا کی پہلی باقاعدہ کرنسی کے طور پر استعمال شروع کیا گیا۔ کرنسی کو قانونی شکل اور اس کی قیمت کو یکساں رکھنے کے لیے سونے، چاندی اور دیگر قیمتی دھاتوں سے بنے سکوں کو کئی صدیوں تک پیسوں کے لین دین کے لیے استعمال کیا جاتا رہا۔

    ساتویں صدی میں چینی تہذیب تنگ کے تاجروں نے سکوں کے بوجھ سے نجات کے لیے کاغذ سے بنی کرنسی بنانے پر کام شروع کر دیا تھا اور
    گیارہویں صدی کے آغاز میں چینی تہذیب سونگ میں پہلی بار کاغذ سے بنی کرنسی کا استعمال شروع کیا گیا۔
    تیرہویں صدی میں مارکو پولو اور ولیم ربرک کی بدولت کاغذی کرنسی یورپ میں متعارف ہوئی۔ مارکو پولو نے بھی اپنی کتاب دی ٹریولز آف مارکو پولو میں یو آن سلطنت کا ذکر کرتے ہوئے لکھا ہے،یہ لوگ اپنے ملک میں درخت کی چھال سے بنی کاغذ سے مشابہہ ٹکڑوں کو لین دین کے لیے بطور پیسہ استعمال کرتے ہیں۔


    وقت کے ساتھ ساتھ کاغذی نوٹوں کی شکل اور معیار میں بہتری آتی گئی اور اس کے بعد کریڈٹ کارڈ متعارف کرائے گئے جنہیں پلاسٹک کرنسی کا نام دیا گیا۔ انٹرنیٹ کی آمد کے بعد پیسوں کے لین دین کے لیے ای کرنسی وجود میں لائی گئی، جس نے صارفین کے لیے انٹرنیٹ پر خریداری کو مزید سہل بنا دیا۔ لیکن چند سال قبل ایک ایسی ورچوئل کرنسی بِٹ کوائن وجود میں آئی، جس کی مالیت اس وقت دنیا کی سب کرنسیوں سے بہت زیادہ ہے۔

    تادم تحریر ایک بِٹ کوائن کی مالیت 2745 امریکی ڈالر ہے، جب کہ پاکستان میں ایک بِٹ کوائن لینے کے آپ کو تقریباً دو لاکھ نوے ہزار روپے دینے پڑیں گے، لیکن اس ورچوئل کرنسی کی قیمت نیچے بھی بہت تیزی سے آتی ہے۔

    اس غیریقینی صورت حال کے باوجود بِٹ کوائن کی مقبولیت میں ہر گزرتے دن کے ساتھ اضافہ ہو رہا ہے۔ جہاں ایک طرف منشیات فروشی، غیرقانونی اسلحے کی تجارت، جوئے کے دھندے میں ملوث اور منی لانڈرنگ کرنے والے افراد کے لیے یہ کرنسی بہت قابلِ اعتماد سمجھی جا رہی ہے تو دوسری جانب بہت سے مشہور ریستورانوں، کاروباری اداروں اور آن لائن خرید و فروخت اور خدمات فراہم کرنے والے ادارے بھی بِٹ کوائن میں پیسوں کا لین دین کر رہے ہیں ، جب کہ چند دن قبل ہی کینیڈا میں دنیا کی پہلی
    ATM
    مشین بھی نصب کی گئی ہے، جس کے ذریعے ابتدائی چند دنوں میں ایک لاکھ ڈالر سے زاید مالیت کی ساڑھے تین سو سے زاید ٹرانزیکشن کی جا چکی ہے۔

    ٭ بِٹ کوائن کیا ہے؟

    بِٹ کوائن رقم کی ادائیگی کے لیے دنیا کا سب سے منفرد ڈیجیٹل کرنسی کا نظام ہے۔ یہ پیسوں کی منتقلی اور وصولی کا دنیا کا پہلا ڈی سینٹرلائزڈ پیر ٹو پیر نیٹ ورک ہے، جو استعمال کنندہ کنٹرول کرتا ہے، جس کے لیے اسے کسی سینٹرل اتھارٹی یا مڈل مین کی ضرورت نہیں پڑتی۔ استعمال کنندہ کے نزدیک بِٹ کوائن انٹرنیٹ پر خرید و فروخت کے لیے کیش کی طرح ہے۔

    ٭ بٹ کوائن کس نے ایجاد کیا؟


    بِٹ کوائن کو پہلی بار ایک نظریے کرپٹو کرنسی کے تحت استعمال کیا گیا، جسے 1998 میں پہلی بار
    Wei Dai
    نے اپنی
    cypherpunks
    (ایسا فرد جو کمپیوٹر نیٹ ورک پر اپنی پرائیویسی کو خصوصاً حکومتی اتھارٹیز کی دسترس سے دور رکھتے ہوئے رسائی حاصل کرے)
    میلنگ لسٹ میں وضع کیا، جس میں اس نے پیسوں کو ایک ایسی نئی شکل میں ڈھالنے کی تجویز پیش کی، جس کی تشکیل اور منتقلی مرکزی حکام کے بجائے cryptography
    (رمزنویسی، فنِ تحریر یا خفیہ کوڈز کو حل کرنا)
    کے طریقۂ کار پر مشتمل ہو۔ پہلے بِٹ کوائن کی تفصیلات اور اس کے حق میں دلائل 2009 میں ساتوشی ناکاموٹو کی cryptography ملنگ لسٹ میں شایع ہوئے تھے۔ 2010 کے اواخر میں ساتوشی نے مزید تفصیلات کا انکشاف کیے بنا اس پروجیکٹ کو چھوڑ دیا، لیکن اس کی ای میل فہرست میں شامل کئی۔ ڈویلپرز نے بِٹ کوائن پروجیکٹ پر کام شروع کر دیا۔

    ساتوشی کی گم نامی نے کئی افراد میں بلاجواز تحفظات پیدا کر دیے اور ان میں سے متعدد کا تعلق بِٹ کوائن کی اوپن سورس ساخت کے حوالے سے غلط فہمیوں سے تھا۔ اب بِٹ کوائن پروٹوکول اور سافٹ ویئر سب کے سامنے شایع ہو چکا ہے اور دنیا کا کوئی بھی ڈویلپر اس کوڈ کا جائزہ اور اپنا ترمیم شدہ بٹ کوائن سافٹ ویئر کا نیا ورژن بالکل اسی طرح بنا سکتا ہے، جیسے موجودہ ڈویلپرز، ساتوشی کا اثر ان تبدیلیوں پر بہت محدود تھا، جنہیں دوسروں نے حاصل کر لیا اور ساتوشی اسے کنٹرول نہیں کر سکا۔

    ٭ بٹ کوائن نیٹ ورک کو کنٹرول کون کرتا ہے؟:

    بٹ کوائن نیٹ ورک کی ایک منفرد بات یہ بھی ہے کہ کوئی بھی اس کا مالک نہیں ہے اور نہ ہی کوئی اس ای میل کے پس منظر میں کام کرنے والی ٹیکنالوجی کی ملکیت کا دعوے دار ہے۔ بِٹ کوائن کو دنیا بھر میں موجود اس کے استعمال کنندہ ہی کنٹرول کرتے ہیں، جب کہ ڈویلپرز اس سافٹ ویئر کو مزید بہتر بنا سکتے ہیں، لیکن وہ بِٹ پروٹوکول میں تبدیلی نہیں کر سکتے، کیوں کہ ہر استعمال کنندہ کو اپنی مرضی کا سافٹ ویئر اور ورژن استعمال کرنے کی مکمل آزادی ہے۔ ایک دوسرے سے مطابقت رکھنے کے لیے تمام استعمال کنندہ کو ایک جیسے اصول پر پورا اترنے والے سافٹ ویئر استعمال کرنے کی ضرورت ہے۔ بِٹ کوائن اسی صورت میں صحیح کام کرتا ہے جب تمام استعمال کنندہ کے درمیان مکمل مطابقت ہو۔ یہی وجہ ہے کہ تمام استعمال کنندہ اور ڈویلپرز اس مطابقت کو تحفظ دینے کے لیے سخت محنت کرتے ہیں۔

    ٭ بِٹ کوائن کیسے کام کرتا ہے؟

    ایک استعمال کنندہ کے نقطۂ نظر سے بِٹ کوائن ایک ایسی موبائل ایپلی کیشن اور کمپیوٹر پروگرام سے زیادہ کچھ نہیں ہے جو ذاتی بِٹ کوائن والیٹ فراہم کرتا ہے اور استعمال کنندہ اس کے ذریعے بٹ کوائن بھیجتا اور وصول کرتا ہے۔ لیکن استعمال کنندہ کے نقطۂ نظر کے برعکس اس کا پس منظر دیکھا جائے تو بِٹ کوائن نیٹ ورک ایک عوامی لیجر (بہی کھاتا) میں شریک کرتا ہے جو بِٹ چین کہلاتا ہے۔ اس لیجر میں تمام ٹرانزیکشن کی تفصیلات موجود ہوتی ہیں اور ہر ٹرانزیکشن کی درستی کے لیے استعمال کنندہ کے کمپیوٹر کی تصدیق کی جاتی ہے۔ کسی جعل سازی سے بچنے کے لیے ہر ٹرانزیکشن کو ڈیجیٹل دستخط سے تحفظ فراہم کیا جاتا ہے، جب کہ کمپیوٹر یا مخصوص ہارڈ ویئرز کے ذریعے یہ سروس فراہم کرنے پر بطور انعام بِٹ کوائن بھی دیے جاتے ہیں جسے اکثر لوگ مائننگ کہتے ہیں۔

    کیا لوگ حقیقت میں بِٹ کوائن کو بطور رقم استعمال کرتے ہیں؟

    دنیا بھر میں بِٹ کوائن کے لین دین میں انفرادی اور کاروباری سطح پر تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، جن میں ریسٹورینٹ، اپارٹمنٹس، لا فرمز، اور آن لائن خدمات فراہم کرنے والی مشہور کمپنیاں
    Namecheap, WordPress, ، Reddit اور Flattr
    شامل ہیں۔ بِٹ کوائن کی مقبولیت میں دن بہ دن اضافہ ہو رہا ہے۔
    جب کہ روزانہ لاکھوں ڈالر مالیت کے بٹ کوائنز کی خرید و فروخت کی جاتی ہے۔

    ٭ بِٹ کوائنز سے ادائیگی کا طریقۂ کار

    بِٹ کوائن سے خریداری کریڈٹ یا ڈیبٹ کارڈ سے زیادہ سہل ہے اور اسے کسی بھی مرچنٹ اکاؤنٹ کے بغیر وصول کیا جا سکتا ہے۔ رقوم کی ادائیگی والیٹ ایپلی کیشن کے ذریعے کی جاتی ہے اور یہ ایپلی کیشن آپ اپنے کمپیوٹر اور اسمارٹ فون سے بھی استعمال کر سکتے ہیں، پیسے بھیجنے کے لیے وصول کنندہ کا ایڈریس اور ادا کی جانے والی رقم لکھ کر
    Send
    کا بٹن دبا دیں۔
    وصول کنندہ کا ایڈ ریس لکھنے کا طریقہ مزید سہل بنانے کے لیے اسمارٹ فون کی مدد سے
    QR
    کوڈ
    ایڈریس، فون نمبرز، ای میل ایڈریس اور ویب سائٹ کی معلومات پر مبنی مخصوص کوڈ جو سیاہ اور سفید چوکور خانوں پر مشتمل ہوتا ہے)
    اور اسکین کرنے پر تمام معلومات فون میں منتقل کر دیتا ہے )۔
    اسکین کر لیں۔

    ٭ بِٹ کوائنز کے فوائد پیسے ادا کرنے کی آزادی

    بِٹ کوائن کے ذریعے دنیا بھر میں کسی بھی جگہ کسی بھی وقت رقوم کی منتقلی اور وصولی فوراً ہو جاتی ہے۔ یہ طریقۂ کار کسی سرحد، کسی بینک ہالیڈے اور کسی حد سے مبرا ہے۔ بِٹ کوائن استعمال کنندہ کو اپنی رقم پر مکمل کنٹرول دیتا ہے۔

    انتہائی کم فیس

    بِٹ کوائن سے کی جانے والی ادائیگیوں پر کوئی فیس نہیں لی جاتی، تاہم بِٹ کوائنز کو کاغذی نوٹوں میں تبدیل کروانے یا فروخت کنندہ کے بینک اکاؤنٹ میں براہ راست جمع کرانے پر معمولی فیس لی جاتی ہے، جو کہ
    Pay Pal
    اور کریڈٹ کارڈ نیٹ ورکس کی نسبت بہت کم ہوتی ہے۔

    مرچنٹس کے لیے کم خطرات

    بٹ کوائنز کی ٹرانزیکشنز محفوظ، ناقابل واپسی ہیں اور ان میں صارف کی حساس اور نجی معلومات بھی شامل نہیں ہوتیں۔ یہی وجہ ہے کہ مرچنٹ کے لیے یہ ایک محفوظ اور بھروسے کے قابل کرنسی سمجھی جا رہی ہے اور وہ کریڈٹ کارڈ سے ہونے والے فراڈ سے بھی ممکنہ حد تک بچ سکتے ہیں۔

    ٭ سیکیوریٹی اور کنٹرول

    بِٹ کوائن کے استعمال کنندہ کو اپنی ٹرانزیکشن پر مکمل کنٹرول ہوتا ہے اور فروخت کنندہ کے لیے بِٹ کوائن کے ذریعے ادائیگی کرنے والے صارف سے فیس کی مد میں اضافی فیس وصول کرنا ناممکن ہے جب کہ بِٹ کوائن سے کی جانے والی ادائیگی صارف کی نجی معلومات کے بنا پر کی جاتی ہے۔ بِٹ کوائن کو بیک اپ کے طور پر بھی محفوظ کیا جا سکتا ہے۔

    ٭ بٹ کوائن کے نقصانات


    بِٹ کوائن مکمل طور پر اوپن سورس اور ڈی سینٹرلائزڈ ہے، جس کا واضح مطلب یہ ہے کہ کوئی بھی کسی بھی وقت مکمل سورس کوڈ پر قابض ہو کر دنیا بھر کے لاکھوں افراد کو ان کی متاع حیات سے محروم کر سکتا ہے۔ تاہم ایسا ہونا بظاہر نا ممکن ہے، کیوں کہ یہ مکمل نظام
    cryptographic algorithms
    پر مشتمل ہے اور کوئی فرد یا تنظیم بِٹ کوائن پر کنٹرول حاصل نہیں کر سکتی۔

    بٹ کوائن کے سب سے بڑے نقصانات میں سے ایک یہ بھی ہے کہ زیادہ تر لوگ ابھی تک بٹ کوائن کے بارے میں نہیں جانتے۔ گرچہ دن بہ دن اس کے استعمال کنندہ کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے، لیکن یہ تعداد ابھی بھی بہت کم ہے۔

    بٹ کوائن کا ایک بڑا نقصان اس کی مالیت میں تیزی کے ساتھ ہونے والا اتار چڑھاؤ ہے، جس کا سب سے زیادہ اثر بٹ کوائن وصول کرنے والے چھوٹے تاجروں اور کاروباری اداروں پر پڑتا ہے۔

    بِٹ کوائن آن لائن بینکنگ نیٹ ورکس اور کریڈٹ کارڈ ز کی طرح ورچوئل ہے۔ بِٹ کوائن کو کرنسی کی دوسری اقسام کی طرح آن لائن شاپنگ اور فزیکل اسٹورز پر خریداری کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے، جب کہ اسے منی چینجر سے ایکسینچ کروا کر کاغذی کرنسی بھی حاصل کی جا سکتی ہے۔ تاہم زیادہ تر لوگ موبائل فون کے ذریعے ادائیگی زیادہ سہل سمجھتے ہیں۔ تاہم بِٹ کوائن کے مستقبل کے بارے میں کچھ کہنا ابھی بعید از قیاس ہے۔ بِٹ کوائن کے کاروبار کو کچھ ملکوں میں غیرقانونی قرار دیا گیا ہے تو کچھ ملکوں میں اس کو قانونی قرار دے کر بِٹ کوائن ایکسچینج کھولنے کے لیے لائسنس کا اجرا بھی کیا جا رہا ہے۔



    ٭ بِٹ کوائن کیسے بنائے جاتے ہیں؟

    نئے بِٹ کوائنز ایک ڈی سینٹرالائز پروسیس مائننگ سے بنائے جاتے ہیں۔ اس طریقۂ کار میں نیٹ ورک کے لیے خدمات سر انجام والے افراد کو انعام کے طور پر بِٹ کوائنز دیے جاتے ہیں۔ ان افراد کو مائنرز کہا جاتا ہے۔ یہ مائنرز ٹرانزیکشنز کو پروسیس کرنے اور اسپیشلائزڈ ہارڈ ویئرز استعمال کرتے ہوئے نیٹ ورک کو محفوظ اور ایکسچینج میں نئے بٹ کوائنز کو جمع بھی کرتے ہیں۔

    بِٹ کوائن پروٹوکول اس طرح ڈیزائن کیا گیا ہے کہ نئے بِٹ کوائن ایک فکسڈ ریٹ پر تخلیق ہوتے ہیں، جس نے بِٹ کوائن مائننگ کو بہت مسابقت والا کاروبار بنا دیا ہے۔ جب زیادہ مائنرز نیٹ ورک میں شامل ہو جاتے ہیں تو پھر انفراد طور پر ہر کسی کا منافع کم ہو جاتا ہے اور کسی ڈویلپر یا مائنر کے پاس منافع میں اضافے کے لیے سسٹم میں ردوبدل کرنے کی اجازت نہیں ہے۔ سسٹم کے معیار سے مطابقت نہ کرنے والے بِٹ کوائن نوڈ کو دنیا بھر میں مسترد کر دیا جاتا ہے۔ بِٹ کوائن کی قیمت کا انحصار معاشیات کے قانون طلب اور رسد پر ہے۔ طلب بڑھنے پر بِٹ کوائن کی قیمت میں اضافہ اور کم ہونے پر کمی ہو جاتی ہے۔

    بِٹ کوائن کی ایک منفرد بات یہ بھی ہے کہ سسٹم میں صرف 21 ملین بِٹ کوائن ہی تخلیق کیے جا سکیں گے۔ تاہم اس کی کوئی حد نہیں ہوگی کیوں کہ
    بِٹ کوائنز کو 8 ڈیسی مل
    (0.000 000 01 BTC)
    میں تقسیم کیا جا سکتا ہے، مستقبل میں ضرورت پیش آنے پر اسے مزید چھوٹے حصوں میں تقسیم کیا جاسکتا ہے۔

    یہاں آرٹیکل کا اختتام ہوتا ہے
    اجازت دیجئے
    والسلام

    وعلیکم السلام


    پیارے بھائی بہت بہت بہت ہی اچھی شیئرنگ کی آپ نے پڑھ کر بہت خوشی ہوئی آپ کی مزید اچھی شیئرنگ کا منتظر آپ کا چھوٹا بھائی

    محمّد شاہزیب

    اللّه حافظ


    Sent from my QMobile x32 using Tapatalk Pro

  6. #42
    raju233 is online now Senior Member+
    Last Online
    Today @ 11:21 PM
    Join Date
    20 Oct 2015
    Gender
    Male
    Posts
    63
    Threads
    4
    Credits
    287
    Thanked
    2

    Default

    good info

  7. #43
    raju233 is online now Senior Member+
    Last Online
    Today @ 11:21 PM
    Join Date
    20 Oct 2015
    Gender
    Male
    Posts
    63
    Threads
    4
    Credits
    287
    Thanked
    2

    Default

    nice info

  8. #44
    smdaylight is offline Senior Member+
    Last Online
    Yesterday @ 01:50 PM
    Join Date
    13 Sep 2017
    Location
    Toba tek Singh
    Age
    35
    Gender
    Male
    Posts
    64
    Threads
    1
    Credits
    247
    Thanked
    3

    Default

    Amazing

Page 4 of 4 FirstFirst 1234

Similar Threads

  1. Replies: 5
    Last Post: 18th December 2015, 10:10 AM
  2. What is Bitcoin??? بٹکوائن کیا ہے؟
    By bitcoinpak in forum General Knowledge
    Replies: 4
    Last Post: 21st November 2015, 06:16 AM
  3. Replies: 4
    Last Post: 5th April 2014, 09:20 PM
  4. Replies: 21
    Last Post: 17th March 2013, 10:01 PM
  5. Replies: 0
    Last Post: 30th September 2012, 09:34 AM

Bookmarks

Posting Permissions

  • You may not post new threads
  • You may not post replies
  • You may not post attachments
  • You may not edit your posts
  •